مفتی عبدالقوی کا ایک اور مبینہ سکینڈل سامنے آگیا،مفتی عبدالقوی نے ہراساں کیا،کیمرے کے سامنے میرے گالوں کو چھوا،بی بی سی کی خاتون رپورٹر ہانی طہ کا الزام 

ملتان(ملتان اپڈیٹس)مقتولہ ماڈل قندیل بلوچ کیساتھ سلفیوں سے شہرت پانے والے ملتان کے مفتی عبدالقوی کا ایک اور مبینہ سکینڈل سامنے آگیا ،بین الاقوامی نشریاتی ادارے بی بی سی کی خاتون رپورٹر ہانی طہ نے الزام عائد کیا ہے کہ مفتی عبدالقوی نے انہیں ہراساں کرنے کی کوشش کی اور کیمرے کے سامنے ان کے گالوں کو بھی چھوا،بین الاقوامی نشریاتی ادارے کی خاتون رپورٹر ہانی طہ نے اپنے ویڈیو پیغام میں بتایا ہے کہ وہ مقتولہ ماڈل قندیل بلوچ سے متعلق انٹرویو لینے مفتی عبدالقوی کے پاس گئیں توانہوں نے مجھے ہراساں کرنے کی کرنے کی کوشش کی۔ہانی طہ کا کہنا ہے کہ مفتی عبدالقوی نے کیمرے کے سامنے میرے دونوں گالوں کو چھوا۔ مجھے اس بات پر بے حد حیرانی ہوئی کہ مفتی قوی نے مجھے چھونے کی کوشش کیوں کی؟ ہانی طہ نے مزید بتایا کہ میں نے مفتی قوی سے کہا کہ میں نے نماز پڑھنی ہے تو انہوں نے مجھے میرے نام کا مطلب بتانا شروع کر دیا۔ مفتی قوی کی اس حرکت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ہانی نے کہا کہ میرے خیال میں قندیل کے ساتھ لی گئی سیلفیز میں مفتی عبدالقوی کا بھی ہاتھ تھا۔۔

شئیر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں